BestPakistaniWebs

Faide

 

Camel Milk Benefits

Camel Milk Benefits

Camel Milk or Oontni ka doodh has more benefits than cow milk. It has being used from hundreds of years ago. Camel milk has lots of iron, Potassium, Copper, Sodium and Manganese which all are very good for baby to elders. It also is full of  Vitamin B1 and Vitamin A. Camel milk also has more proteins than cow milk. The best thing is that it has less cholesterol in it. Oonti ka doodh jald hazam hota he because of low lactose in it. So, Let's see in details about Camel Milk Benefits.

کریلے اونٹنی کے دودھ کے فائدے

 

 

اونٹنی کا دودھ گائے /بھینس کے دودھ سے زیادہ بہتر) گائے کی دودھ اور اونٹنی کے دودھ میں بہت سا فرق ہوتا ہے۔ مثلاً ) اونٹنی کے دودھ میں گائے کی نسبت زیادہ آئرن، پوٹاشیم، کاپر، سوڈیم اور مینگنیز پایا جاتا ہے۔ ) اونٹنی کے دودھ میں زیادہ مقدار میں وٹامن A اور B2پائے جاتے ہیں۔) اسکے علاوہ اسمیں گائے کی نسبت زیادہ پروٹین پائے جاتے ہیں۔ گائے کے دودھ کی نسبت اونٹنی کے دودھ میں تین گنا زیادہ وٹامن Cپایا جاتا ہے۔ ) اسکے علاوہ اس میں کم مقدار میں کولیسٹرول ہوتا ہے۔ ) چونکہ اونٹنی کے دودھ کے کم مقدار میں Lactoseہوتے ہیں اسلیے یہ جلدی ہضم ہو جاتا ہے۔ ) اونٹنی کے دودھ میں گائے کے دودھ کی نسبت زیادہ اثر انداز جراثیم کش خصوصیات پائی جاتی ہیں۔

 

اونٹنی کے دودھ کئے فائدے


1.۔ ذیابیطس یعنی شوگر کے لیے مفید


اونٹنی کے دودھ میں ایسے غذائی اجزاء پائے جاتے ہیں جو کہ شوگر کے لیے علاج میں بہت ہی مفید ہیں۔ اسکے اندر انسولین کا طرح کے پروٹین ہوتے ہیں جو کہ شوگر کے 
اثرات کو کم کرتے ہیں۔ اگر اس دودھ کا باقاعدگی سے استعمال کرتے رہیں تونہ صرف شوگر سے بچا جا سکتا ہے بلکہ بڑھی ہوئی شوگر بھی کم ہو جاتی ہے۔ 


2.۔ قوتِ مدافعت بڑھاتا ہے


اونٹنی کے دودھ کے بہت ایسے ملتے جلتے غذائی اجزاء پائے جاتے ہیں جیسا کہ انسانیدودھ میں پائے جاتے ہیں جس سے ہمارے جسم کی قوتِ مدافعت بڑھ جاتی ہے اور ہم بیماریوں سے بچ سکتے ہیں۔ اسی وجہ سے اونٹنی کے دودھ کو ماؤں کے دودھ کا نعم البدل بھی کہا جاتا ہے۔ اس دودھ میں بہت زیادہ مقدار میں Immunoglobulinاور Lysoyme اور Lactoperoxidaseپائے جاتے ہیں، جو کہ ہمارے جسم میں انفیکشن سے لڑنے کے لیے مددگار ہوتے ہیں۔


3.۔ ہر طرح کی الرجی کے لیے


اونٹنی کے دودھ کا سب سے قابلِ ذکر فائدہ اسکا الرجی کے لیے مفید ہونا ہے۔ یہ دودھ نہ صرف ہمیں مختلف قسم کی الرجی سے بچاتا ہے بلکہ اگر کسی کو کئی الرجی ہو چکی ہے تو اسکو کم بھی کرتا ہے۔ 2005اسرائیل میں ایک ریسرچ کی گئی جس میں یہ بات ثابت ہوئی کہ کچھ ایسے بچے جن کو الرجی تھی ، انکو اونٹنی کا دودھ پلایا گیا ، وہ سب کے سب ٹھیک ہو گے۔ اس ریسرچ میںیہ بات بھی ثابت ہوئی کہ اونٹنی کا دودھ الرجی کے علاج میں میڈیکل طریقوں سے زیادہ اثر انداز ہے۔ 


4.۔ دل اور خون کے لیے مفید


اونٹنی کے دودھ میں ایک خاص طرح کا Oleic Acidپایا جاتا ہے۔ اسکا ایسے ہی فائدہ ہوتا ہے جیسا کہ زیتون کے تیل کا ہوتا ہے۔ اونٹنی کے دودھ میں A2 Beta Caseinبھی پایا جاتا ہے جب کہ گائے کے دودھ میں A1 Caseinپایا جاتا ہے۔ A2 Caceinدل کی صحت کے لیے مفید ہوتا ہے۔ اسی وجہ سے یہ دودھ دل کے لیے اور خون کے لیے بہت مفید ہوتا ہے۔ 


5.۔ ٹی بی کا علاج


ایسی کئی ریسرچ کی گئی ہیں جسمیں یہ ثابت ہوا ہے کہ ٹی بی کی امراض میں اونٹنی کا دودھ بہت ہی اثر رکھتا ہے۔ اونٹنی کے دودھ میں پائے جانے والے جراثیم کش خصوصیات کی وجہ سے تپِ دق یا ٹی بی کو ٹھیک کرنے میں مدد ملتی ہے۔یہ بات بھی ثابت ہوئی کہ اونٹنی کا دودھ الرجی کے علاج میں میڈیکل طریقوں سے زیادہ اثر انداز ہے۔ 

گائے اور بھینس کے مقابلے میں جلدی ہضم ہوجاتا ہے۔

7۔  اونٹنی کے دودھ میں زیادہ پروٹین ہیں ۔ باڈی بلڈ، کھلاڑی وغیرہ بھی پی سکتے ہیں۔

 

 


 

 

 

 

 

 

All Rights Reserved @ BestPakistaniWebs